98

پاراچنار کے ہسپتال کی اپ گریڈیشن اور ڈاکٹروں کی کمی کیخلاف سول سوسائٹی کا احتجاجی مظاہرہ

پاراچنار (محمد صادق) ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال پاراچنار میں ڈاکٹروں کی کمی اور دیگر مشکلات کے خلاف سول سوسائٹی نے احتجاج شروع کیا ہے اور حکومت سے ہسپتال کی آپ گریڈیشن اور عملے کی کمی پورا کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں۔

اپنے مطالبات کے حق میں شہری احتجاجی جلوس کی شکل میں ہسپتال سے روانہ ہوئے اور مین روڈ پر نعرے بازی کرتے ہوئے پریس کلب پہنچے جہاں احتجاجی مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مزمل حسین، علامہ باقر حیدری، سماجی رہنما فہیم طوری، مجاہد حسین ٹرائبل یوتھ موومنٹ کے جمشید شیرازی، شفیق طوری، ہدایت حسین اور دیگر رہنماؤں نے کہا کہ چار لاکھ کی آبادی کے لئے صرف آٹھ ڈاکٹر ہسپتال میں موجود ہیں جسے عوامی مشکلات میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

مقررین کا کہنا تھا کہ وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا نے دورہ پاراچنار کے موقع پر ہسپتال کی اپ گریڈیشن کا اعلان کیا تھا مگر تاحال اس اعلان پر کوئی عمل نہیں ہوا اور پاراچنار ہسپتال عملے کی کمی کی وجہ سے پہلے سے لوگ مشکلات کا شکار تھے سینئر ڈاکٹرز کی پروموشن کی وجہ سے اب ان کا بھی تبادلہ ہوگیا ہے اور ہسپتال میں صرف آٹھ ڈاکٹر رہ گئے ہیں مقررین کا کہنا تھا کہ علاج کی غرض سے آنے والے مریضوں کو پشاور اور دیگر ہسپتال میں ریفر کیا جارہا ہے جس کی وجہ سے لوگوں کے مشکلات میں روز بروز اضافہ ہوتا جارہا ہے۔

رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ ہسپتال میں عملے کی کمی کو پورا کیا جائے اور وزیر اعلیٰ نے پاراچنار کے دورے کے موقع پر ہسپتال کی اپ گریڈیشن کا جو اعلان کیا تھا اس پر عمل کیا جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں