فیصل آباد میں چینی انجینیر نے مزدور کو جلتی بھٹی میں پھینک دیا، حالت تشویشناک

فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پنجاب کے ضلع فیصل آباد کے انڈسٹریل اسٹیٹ ساہیانوالہ کی نجی فیکٹری میں چینی انجینیر نے مبینہ طور پر مقامی مزدور کو جلتی بھٹی میں دھکا دیدیا۔

فیصل آباد کی نجی فیکٹری میں چینی انجینیر نے مزدور شہروز کو کام سمجھ نہ آنے پرجلتی بھٹی میں دھکا دیا، شہروز کو تشویشناک حالت میں الائیڈ اسپتال فیصل آباد منتقل کردیا گیا۔ پولیس نے چینی افسر کو حراست میں لے کر تحقیقات شروع کردی ہیں۔

ذرائع نے ڈیلی اردو کو بتایا کہ ساہیانوالہ انڈسٹریل اسٹیٹ میں بیٹریاں پگھلانے والے 22 سالہ فیکٹری مزدور کو کام کی جلدی سمجھ نہیں آ رہی تھی تو چینی سپروائز مسٹر ٹینگوبنگ نے چلتی بھٹی میں دھکا دیدیا۔

آگ سے اسی فیصد جھلسنے والا والدین کا اکلوتا بیٹا فیصل آباد کی تحصیل چک جھمرہ کے گائوں147 ر – ب چوڑی کا رہائشی شہروز الائیڈ اسپتال میں زیر علاج ہے۔

سی پی او اظہر اکرام نے بتایا کہ چینی شہری کو تحویل میں لے لیا گیا ہے اور قانون کے مطابق کارروائی کریں گے ، ڈی ایس پی اور ایس ایچ او واقعے کی تفتیش کررہے ہیں۔

فیکٹری میں شہروز کے ساتھی مزدوروں نے احتجاج کرتے ہوئے انصاف کا مطالبہ کیا۔ چینی شخص فیکٹری میں لیبر انچارج کے عہدے پر تعینات ہے۔

متاثرہ مزدور شہروز نے پولیس کو بیان ریکارڈ کرواتے ہوئے کہا کہ چینی افسر نے کرین کا ریموٹ پکڑنے کا کہا مجھے زبان سمجھ نہیں آئی تو اس نے بھٹی میں دھکا دیدیا، ساتھی مزدوروں نے بھٹی سے نکال کر اسپتال پہنچایا۔

ایس پی طاہر مسعود کے مطابق چینی شہری کو حراست میں لے لیا ہے تاہم ابھی مقدمہ درج نہیں کیا۔ متاثرہ مزدور کے چچا کے مطابق فیکٹری ترجمان کی جانب سے متاثرہ مزدور پر بیان بدلنے کیلئے دباؤ ڈالا جارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں