224

غرب اردن اور القدس میں اسرائیلی فوج کا کریک ڈاؤن، 22 فلسطینی گرفتار

غزہ (ڈیلی اردو) فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس اور مقبوضہ مغربی کنارے کے علاقوں میں آج سوموار کو اسرائیلی فوج نے گھر گھر تلاشی کے دوران 22 فلسطینیوں کو گرفتار کر کے بعد جیلوں میں‌ ڈال دیا ہے۔ قابض صہیونی فوج کا کہنا ہے کہ محروسین میں بعض اسرائیلی سیکیورٹی اداروں کو مطلوب تھے۔

گرفتار کئے گئے تمام فلسطینیوں کو تفتیش کے لیے حراستی مراکز اور عقوبت خانوں‌ میں ڈال دیا گیا ہے۔

مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق قابض فوج نے غرب اردن کے جنوبی شہروں الخلیل اور بیت لحم میں گھر گھر تلاشی کے دوران متعدد فلسطینیوں‌ کو حراست میں لے لیا۔

الخلیل میں بیت امر کےمقام پر چھاپے کےدوران 25 سالہ یوسف احمد حمدان، 22 سالہ محمد حسین جعفر عادی اور 17 سالہ احمد کریم محمد اخلیل کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔

فلسطینی سماجی کارکن محمد عوض نے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے فلسطینیوں کے گھروں پر اشتعال انگیز انداز میں چھاپے مارے۔

الخلیل میں تلاشی کے دوران قابض فوج نے ابو اسنینہ خاندان کے گھر میں‌ تلاشی لی۔ تلاشی کے دوران قیمتی سامان کی توڑپھوڑ اور لوٹ مار کی گئی۔

ادھر جنوبی شہر بیت لحم میں تلاشی کےدوران 7 فلسطینیوں‌کو حراست میں لیا گیا۔ ان کی شناخت یزن ماجد العمور،خليل داود أبو مفرح، زكي محمود العمور، عاهد محمد العمور اس کے والد، فايز موسى العمور، موسى محمود العمور، وأمين علي جبرين کو حراست میں لے لیا گیا۔

قابض اسرائیلی فوج نے غرب اردن کے شمالی شہر جنین میں شاہراہ الناصرہ پر فلسطینیوں کی تلاشی کے دوران متعدد شہریوں‌کو حراست میں لیا۔ اس موقع پر اسرائیلی فوج نے دعویٰ‌کیا کہ پٹرولیم پولیس پر فلسطینیوں‌کی طرف سے دیسی ساختہ دسی بم پھینکے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں