176

پومپیو کا دورہ سعودی عرب و ابوظہبی، ایرانی خطرات سے نمٹنے کیلئے بات چیت

ریاض + ابوظہبی (نیوز ڈیسک) امریکا کے وزیر خارجہ مائیک پومپیو نے ابوظبی میں ولی عہد شیخ محمد بن زاید آل نہیان سے خلیج میں سلامتی کی صورت حال اور ایران کے خطرے سے نمٹنے کے بارے میں بات چیت کی ہے۔

متحدہ عرب امارات میں امریکی مشن نے قبل ازیں ایک ٹویٹ میں یہ اطلاع دی تھی کہ وزیر خارجہ مائیک پومپیو ابو ظبی کے دورے کے موقع پر دنیا میں دہشت گردی کی ریاست کی سطح پر اسپانسر کرنے والے ملک سے نمٹنے کے لیے ایک عالمی اتحاد کی تشکیل سے متعلق امور پر گفتگو کریں گے۔

وہ سوموار کو سعودی عرب کے دورے کے بعد متحدہ عرب امارات کے دارالحکومت ابوظبی پہنچے ہیں۔ انھوں نے جدہ میں سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز اور سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان سے الگ الگ ملاقاتیں کیں، ملاقاتوں میں خطے میں بڑھتی ہوئی کشیدگی اور بالخصوص خلیج میں جہاز رانی کی سیکیورٹی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا تھا۔

امریکی محکمہ خارجہ کے ایک سینیر عہدہ دار نے قبل ازیں کہا تھا کہ امریکا اپنے اتحادیوں کے ساتھ مل کر ایک اتحاد تشکیل دے رہا ہے تاکہ خلیج میں محفوظ جہاز رانی کے لیے آبی گذرگاہوں کا تحفظ کیا جاسکے۔

اہلکار کے مطابق امریکہ خلیجی اتحادیوں کے ساتھ مل کر خلیجِ فارس سے ہونے والی تیل کی تجارت کی حفاظت یقینی بنانا چاہتا ہے اور مائیک پومپیو نے اپنے حالیہ دورے کے دوران علاقائی ملکوں کی قیادت سے اس معاملے پر بھی بات کی ہے۔

اہلکار نے بتایا کہ امریکہ خطے کے ملکوں کے ساتھ مل کر شپنگ لائنز کو محفوظ بنانے کے لیے فوجی اتحادتشکیل دینا چاہتا ہے جس میں امریکی بحریہ کلیدی کردار ادا کرے گی۔

ایک اور امریکی اہلکار نے خبررساں ادارے ‘رائٹرز’ کو بتایا ہے کہ مجوزہ منصوبے کے تحت امریکہ اور اس کے اتحادیوں کے جہاز خلیجِ عمان اور آبنائے ہرمز میں تھوڑے تھوڑے فاصلے پر تعینات کیے جائیں گے جو وہاں سے گزرنے والے تیل بردار جہازوں کی حفاظت یقینی بنائیں گے۔

امریکا خلیج عُمان میں آئیل ٹینکروں پر حالیہ حملوں کے بعد سے اپنےعلاقائی اتحاد یوں سے بات چیت کررہا ہے۔امریکا نے ایران پر اس حملے کا الزام عائد کیا ہے جبکہ ایران نے اس کی تردید کی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں