اسرائیلی فوج کا وحشیانہ کریک ڈاؤن، 3 صحافیوں سمیت 23 فلسطینی گرفتار

رام اللہ (ڈیلی اردو/نیوز ایجنسی) قابض اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطین کے مقبوضہ مغربی کنارے اور بیت المقدس میں گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں میں تین صحافیوں سمیت 23 فلسطینیوں کو گرفتار کرلیا گیا۔

مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق اسرائیلی فوج کی طرف سے جاری ایک بیان میں کہا گیا کہ غرب اردن اور القدس میں گھر گھر تلاشی کی کارروائیوں میں 18 فلسطینیوں کو حراست میں لیا گیا۔ ان میں سے بعض فلسطینی اسرائیلی فوج کو مزاحمتی حملوں میں ملوث تھے۔

غرب اردن کے شمالی شہر نابلس میں عصیرہ کے مقام پر چھاپے کے دوران 11 فلسطینیوں کو گرفتار کیا گیا۔ ان کی شناخت الشیخ المحرر ضرار حمادن، عمرو حمادن، سابق اسیران دہم شولی، مناضل سعاد، حمز یاسین، محمد حمادن، بی حمادن، عمر دغلس، برا جرارع، حمد براہیم صوالح اورعاصم دغلس کے ناموں سے کی گئی

ادھر غرب اردن کے شمالی شہر طولکرم میں بلعا کے مقام سے رسمی البلیک کو حراست میں لیا۔شمالی شہر جنین میں تلاشی کے دوران صحافی محمد عتیق، برقین سے مہدی جمیل عاصی اور محمد فاروق عابد کی گرفتاری عمل میں لائی گئی۔

ادھر غرب اردن کے جنوبی شہر الخلیل میں الفوار کیمپ سے فارس عادل الطیطی، سبق اسیر ھیثم عواد جراھید، مروان عواد جراعید، جب کہ بیت المقدس میں العیزریہ کے مقام پر تلاشی کیدوران طارق العموری، مجد بو رومی، مظفر بو رومی، اورمحمد زریا علیان کو گرفتار کیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں