راہول گاندھی بھی مقبوضہ کشمیر کے مسئلے پر بی جے پی کی زبان بولنے لگے

نئی دہلی (ڈیلی اردو) کانگریس کے لیڈر راہول گاندھی کشمیر کے مسئلے پر حکمران جماعت بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کی زبان بولنے لگے۔

سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں ان کا کہنا تھا کہ گو کہ ہمارا حکمران جماعت کے ساتھ شدید اختلاف ہے مگر میں یہ بات واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ مقبوضہ کشمیر بھارت کا اندرونی مسئلہ ہے، پاکستان کے لیے کوئی گنجائش نہیں کہ وہ اس میں مداخلت کرے۔

انہوں نے الزام لگاتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں جو تشدد ہورہا ہے وہ پاکستان کے اکسانے پر کیا جارہا ہے۔

یاد رہے گزشتہ دنوں مودی سرکاری نے راہول گاندھی اور غلام نبی آزاد سمیت 12 سیاست دانوں کو مقبوضہ کشمیر پہنچنے پر ہوائی اڈے سے ہی واپس بھیج دیا تھا۔

راہول گاندھی اور اپوزیشن کی آمد پر سری نگر ایئرپورٹ پر ہنگامہ آرائی ہوئی اور پولیس نے رہنماں کو وی آئی پی لانج میں بند کردیا تھا۔

ایئرپورٹ پر پولیس کی بھاری نفری موجود تھی جبکہ پولیس نے راہول گاندھی کے ساتھ آنے والے وفد کو بھی علیحدہ کمرے میں بھیج دیا۔

بھارتی میڈیا کے مطابق نئی دہلی سے آنے والے میڈیا کو ایئرپورٹ سے باہر نکال دیا گیا اور صحافیوں کو تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔

بعد ازاں راہول گاندھی سمیت دیگر سیاست دانوں کو سری نگر ہوائی اڈے سے زبردستی واپس بھیج دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں