139

مقبوضہ کشمیر: کشمیریوں پر ’پبلک سیفٹی ایکٹ‘ لاگو

سری نگر (ویب ڈیسک) مقبوضہ کشمیر میں مسلسل کرفیو اور پابندیاں 28 ویں روز بھی برقرار ہیں اور نہتے کشمیریوں پر بھارتی فوج کے مظالم جاری ہیں، حکومت نےگرفتار ساڑھے 4 ہزار سے زائد کشمیریوں پرکالا قانون ’پبلک سیفٹی ایکٹ ‘ لاگو کر دیا ہے۔

وادی میں مکمل لاک ڈاؤن ہے، کشمیریوں کا بیرونی دنیا سے رابطہ منقطع ہے، کرفیو اور پابندیوں کے باوجود مقبوضہ وادی میں کشمیریوں کی مزاحمت جاری ہے، جبکہ حریت رہنما اور سیاسی رہنما بدستور گھروں اور جیلوں میں بند ہیں۔

کرفیو اور پابندیوں کے باعث مقبوضہ وادی میں کھانےپینے کی اشیاء کی قلت، مریضوں کو دواؤں کی فراہمی بھی مشکل ہوگئی ہے۔

دوسری جانب قابض بھارتی حکومت نے 5 اگست سے گرفتار کئے گئے 10 ہزار کشمیریوں میں سے ساڑھے 4 ہزار سے زائد پر کالا قانون ’پبلک سیفٹی ایکٹ‘ لاگو کر دیا ہے جن میں حریت رہنما، سیاسی کارکن ، تاجر، سماجی کارکن اور عام نوجوان شامل ہیں۔

پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت کسی بھی شخص کو بغیر کسی عدالتی کارروائی کے دو برس تک حراست میں رکھا جاسکتا ہے، بھارتی ایجنسیاں 35 ہزار سے زائد سوشل میڈیا اکاؤنٹس کی چھان بین بھی کر رہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں