شنگھائی تعاون تنظیم کی مسئلہ کشمیر حل کرانے کی پیشکش

بیجنگ (ڈیلی اردو/نیوز ایجنسی) بھارت کو ایک اور سبکی کا سامنا، سفارتی محاذ پر پاکستان کو بڑی کامیابی مل گئی، شنگھائی تعاون تنظیم نے مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے یک طرفہ اقدام کو مسترد کرتے ہوئے مسئلہ کشمیر حل کرانے کی پیش کش کردی۔

مسئلہ کشمیر سے متعلق دنیا بھر میں تشویش کی لہر، شنگھائی تعاون تنظیم نے مسئلہ حل کرانے کی پیش کش کر دی، سربراہ شنگھائی تعاون تنظیم ولادی میر نوروف نے کہا ہے کہ مسئلے  کے حل کا بنیادی اصول ہے کہ کوئی یکطرفہ اقدامات نہ اٹھائے جائیں۔

انہوں نے کہا کہ اس کے پرامن حل کے لیے بہترین کوششیں کی جائیں گی، ایس سی او کے سربراہ نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے دو طرفہ ایشوز ہی سہی مگر ممبر ممالک ایک طرف خاموش ہو کر نہیں بیٹھ سکتے۔

شنگھائی تعاون تنظیم میں چین، پاکستان، روس، بھارت، کرغستان، تاجکستان اور ازبکستان شامل ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں