اوکاڑہ: بیوی کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے پر شوہر کو 2 ماہ قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا

اوکاڑہ (ڈیلی اردو) عدالت نے مصالحتی کونسل کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے پر ملزم کو 2 ماہ قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا سنادی۔

تفصیلات کے مطابق پنجاب کے ضلع اوکاڑہ میں عدالت نے مصالحتی کونسل کی اجازت کے بغیر دوسری شادی کرنے پر ملزم کو سزا 2 ماہ قید اور 5 لاکھ جرمانے کی سزا سنائی، جس کے بعد ملزم سلیم کو عدالت سے گرفتار کرلیا گیا۔

یاد رہے اسلام آباد ہائی کورٹ نے دوسری شادی کے لیے مصالحتی کونسل کی اجازت ضروری قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ بیوی کی اجازت کے باوجود مصالحتی کونسل انکار کر دے تو دوسری شادی پر سزا ہوگی۔

عدالت کا کہنا تھا کہ مسلم فیملی لاز آرڈیننس 1961 کے مطابق اجازت کے بغیر شادی کرنے والے شخص کو سزا اور جرمانہ ہو گا، جس شخص کے پاس قومی شناختی کارڈ ہے، اس پر تمام قوانین کا اطلاق ہوگا۔

یاد رہے رواں سال مارچ میں لاہور کی مقامی عدالت نے بغیر اجازت شادی کرنے والے خاوند کو تین ماہ قید اور پانچ ہزار روپے جرمانہ کی سزاکا حکم سنا دیا، بیوی نے شوہر کے خلاف درخواست دائر کی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں