قاسم سلیمانی استقامت کے علمبردار تھے، جن کا پرچم ہمیشہ لہراتا رہے گا: ایرانی صدر روحانی

تہران (ڈیلی اردو/ارنا) ایران کے صدر ڈاکٹر حسن روحانی نے پاسداران انقلاب کے کمانڈر قدس جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت پر گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ شہید سلیمانی عزت و استقامت کے علمبردار تھے جن کا پرچم تا ابد سربلند رہے گا۔

ایرانی نیوز ایجنسی ارنا کے مطابق حسن روحانی نے جمعہ کے روز اپنے ایک پیغام میں امریکہ کے ذریعہ جنرل قاسم سلیمانی اور اس کے ساتھیوں کی شہادت پر اظہار تعزیت کرتے ہوئے کہا کہ ہم یقین رکھتے ہیں کہ اس عظیم شہید کا پرچم اسلام کے سپاہیوں کے ہاتھ قائم رہے گا۔

انہوں نے کہا کہ قاتل امریکہ کے ذریعہ اسلام اور ایران کے عظیم اور بہادر کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی اور ان کے متعدد ساتھیوں خصوصا ابو مہدی المہندس کی شہادت نے ایرانی قوم اور اقوام عالم کے ضمیر کو جھنجھوڑا کر کے عظیم ایرانی عوام اور دیگر آزاد اقوام کا امریکی انتہا پسندی کے مقابلہ کرنے اور اسلامی اقدار کے دفاع کے لئے عزم کو دوگنا کردیا ہے۔

حسن روحانی نے کہا کہ یہ بزدلانہ دہشت گردی خطے میں امریکہ کی تنہائی کی علامت ہے اور امریکہ نے تمام انسانی اور بین الاقوامی قوانین کی پامالی کے ساتھ اس ملک کی کالی کتاب میں ایک اور صفحہ شامل کیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ عظیم ایرانی قوم اور خطے کی دیگر اقوام امریکہ کے وحشیانہ قتل کا بدلہ لیں گی۔

عراقی میڈیا کے مطابق، ایرانی پاسداران انقلاب فورس کی القدس بریگیڈ کے کمانڈر اور عراقی شیعہ رضاکار فورسز کے عبوری کمانڈر، عراقی پاپولر موبلائزیشن فورسز کے نائب سربراہ ابو مہدی المہندس، جو بغداد کے ہوائی اڈے سے دو کاروں میں الگ الگ روانہ ہو رہے تھے، پر حملہ کر کے ان کو شہید کردیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں