ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کی جنرل قاسم سلیمانی کے خاندان کے ساتھ ملاقات

تہران (ڈیلی اردو) ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای نے جمعہ کی شام شہید جنرل قاسم سلیمانی کے گھر میں ان کے خاندان کے ساتھ ملاقات کرکے اپنی تعزیت کا اظہار کیا۔

اس سے قبل انہوں نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ قاسم سلیمانی کی شہادت پر ہمیں شدید صدمہ اور ناقابل تلافی نقصان پہنچا تاہم مزاحمت سے دستبردار نہیں ہوں گے اور اس قاتلوں اور مجرموں سے سخت سے سخت انتقام لیا جائے گا۔

قائد اسلامی انقلاب نے جنرل سلیمانی کے ہمراہ شہید ہونے والے عراقی فورس الحشد الشعبی کے کمانڈر ابومہدی المہندس پر بھی افسوس کا اظہار کرتے ہوئے ان کے خاندان اور لواحقین کے ساتھ تعزیت کا اظہار کیا۔

انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے دوست بالخصوص ہمارے دشمن جان لیں کہ ہم مزاحمتی فرنٹ پر مزید ثابت قدم رہیں گے بلکہ ایسی کاروائیوں سے کامیابی کے حصول کے لئے ہمارا عزم متاثر نہیں ہوگا۔

قائد اسلامی انقلاب آیت اللہ خامنہ ای نے جمعہ کے روز اپنے ایک بیان میں جنرل سلیمانی کی مظلومانہ شہادت پر ایران میں تین روزہ سوگ کا بھی اعلان کیا۔

یاد رہے کہ ایرانی پاسداران انقلاب فورس کی القدس بریگیڈ کے ممتاز کمانڈر جنرل قاسم سلیمانی جمعہ کے روز علی الصبح بغداد میں امریکی ڈرون حملے میں نو ساتھیوں سمیت شہید ہوگئے تھے۔

دیگر شہدا میں عراقی ملیشیا کا نائب سربراہ کمانڈر جنرل ابو مہدی المہندس، حزب اللہ کے سابق کمانڈر عماد مغنیہ کا داماد سامر عبداللہ، قاسم سلیمانی کا داماد، بغداد ہوائی اڈے پر عراقی ملیشیا کا پروٹوکول مینجر محمد رضا الجابری، عراقی ملیشیا کا کمانڈر حسن عبد الہادی، عراقی ملیشیا کا کمانڈر محمد الشيبانی، عراقی ملیشیا کا کمانڈر حیدر علی اور لبنانی حزب اللہ کا رہ نما محمد الکوثرانی شامل ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں