ایران کا امریکا پر پہلا کامیاب جوابی حملہ

واشنگٹن (ڈیلی اردو) ایران نے امریکا پر جوابی حملہ کرتے ہوئے امریکی محکمہ ہوم لینڈ سیکیورٹی کی ویب سائٹ کو ہیک کرلیا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق امریکی محکمہ ہوم لینڈ سیکیورٹی کی فیڈرل ڈیپوزیٹری لائبریری پروگرام کی ویب سائٹ کو ہیک کیا گیا اور ہیکرز نے ویب سائٹ پر ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کی تصویر اور ایرانی پرچم لگا دیا ہے۔

امریکی میڈیا کے مطابق ہیکرز کی جانب سے پیغام میں لکھا گیا کہ ایران کی سائبر طاقت کا یہ صرف چھوٹا سا مظاہرہ ہے۔

امریکی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی ہیکر گروپ نے امریکا کی بڑی ویب سائٹ کو ہیک کر لیا ہے۔ یہ خبر امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے ٹوئیٹس کے کچھ ہی دیر بعد ملی ہے، امریکی صدر نے اپنے ٹوئیٹس میں کہا تھا کہ ایران کی 52 سائٹس امریکا کے نشانے پر ہیں، جن میں ایران اور ایرانی ثقافت سے متعلق اہم ترین سائٹس شامل ہیں۔

ایک غیر ملکی میڈیا سائیٹ کے مطابق امریکا کی ہیک ہونے والی ویب سائٹ کے پیچھے ایرانی گروپ ہے۔

ایک اور غیر ملکی صحافی سٹیفن ملر نے ٹوئیٹ کیا ہے کہ ایران کی انتقامی کارروائی کا مقصد ہمیں یہ بتانا ہے کہ ہماری تمام سرکاری ویب سائٹ کتنی پرانی ہیں۔

اس خبر کی مخلتف ذرائع سے تشہیر ہو رہی ہے لیکن ابھی تک امریکی حکومت کی جانب سے کوئی بیان جاری نہیں کیا گیا۔

ایک اور ٹوئیٹر صارف نے ٹوئٹ کیا ہے کہ امریکی حکومت کی ویب سائٹ ایران سائبر سکیورٹی گروپ نے ہیک کرکے آف کر دی ہے۔ ہیکرز نے ویب سائٹ کو ہیک کرنے کے بعد اسے مکمل طور پر تبدیل کر دیا ہے۔

ویب سائٹ پر ایرانی سپریم لیڈر آیت اللہ خامنہ ای کی تصویر لگا دی گئی ہے جبکہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی تصویر کو خوفناک انداز میں دکھایا گیا ہے۔ تصویر میں دکھایا گیا ہے کہ ویب سائٹ کو ہیک کرنے کا مطلب ایران کی جانب سے ڈونلڈ ٹرمپ کی گال پر مکا ہے۔ اس کے علاوہ یہ بھی لکھا ہوا ہے کہ یہ اسلامی ریپبلک ایران کی طرف سے پیغام ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں