286

قندوز میں افغان فضائی حملے میں پاکستانی طالبان کمانڈر محب اللہ ہلاک

کابل (ڈیلی اردو) افغانستان میں ایک فضائی حملے میں پاکستانی طالبان کمانڈر محب اللہ والد شیر ولی خان کی کار کو نشانہ بنایا گیا ہے جس کے نتیجے میں وہ ہلاک ہو گیا۔

افغان میڈیا کے مطابق افغان طالبان کے اہم کمانڈر محب اللہ اپنی کار میں قندوز کے دورے پر آئے تھے جہاں انہیں طالبان جنگجوؤں سے ملاقات کرنا تھی۔ انٹیلی جنس ادارے نے صوبے میں کمانڈر کی آمد سے افغان فوج کو آگاہ کردیا۔

ترجمان وزارت دفاع کا کمانڈر محب اللہ کی ہلاکت کی تصدیق کرتے ہوئے کہنا ہے کہ افغان فوج نے کمانڈر کو نشانہ بنانے کے لیے زمینی کارروائی کے بجائے فضائی حملے کا انتخاب کیا اور ان کی گاڑی کو نشانہ بنا ڈالا۔ فضائی حملے میں کمانڈر کی گاڑی مکمل طور پر تباہ ہوگئی اور کمانڈر محب اللہ موقع پر ہی ہلاک ہوگئے۔

صوبے قندوز میں طالبان جنگجو کافی متحرک ہیں اور کئی اضلاع میں ان کا تسلط تاحال برقرار ہے تاہم طالبان کی جانب سے اپنے اہم کمانڈر کی ہلاکت پر کسی قسم کا تبصرہ نہیں کیا گیا ہے۔ اس علاقے میں سیکیورٹی فورسز اور جنگجوؤں کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ تاحال جاری ہے۔

واضح رہے کہ امریکا اور طالبان کے درمیان ہونے والے امن مذاکرات تعطل کا شکار ہیں اور سیکیورٹی فورسز کی کارروائی کیساتھ کیساتھ طالبان جنگجوؤں کے حملوں میں بھی اضافہ دیکھنے میں آیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں