80

پاکستان میں خودکش حملوں کا ماسٹر مائنڈ افغانستان میں ساتھی سمیت ہلاک

اسلام آباد (ڈیلی اردو) پاکستان میں خودکش دھماکوں کا ماسٹر مائنڈ نور گل افغانستان میں ایک دھماکے میں ہلاک ہو گیا۔

سکیورٹی ذرائع کے مطابق گزشتہ روز افغان صوبے کنڑ میں ایک گاڑی کو بم دھماکے سے اڑایا گیا تھا جس میں دو افراد ہلاک اور ایک زخمی ہوا تھا۔ آئی ای ڈی دھماکے کا نشانہ بننے والوں کی شناخت ہوگئی ہے۔

سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ دھماکے میں ہلاک ہونے والے ایک شخص کی شناخت کالعدم تنظیم جماعت الاحرار کے مالیاتی کمیشن کے سربراہ نورگل کے نام سے ہوئی ہے۔ اس کے ساتھ بم دھماکے میں نائب امیر رشید عرف ماما بھی ہلاک ہوا ہے جبکہ کمانڈر وحید گل شدید زخمی ہوا ہے۔ یہ دہشتگرد جلال آباد سے اپنی گاڑی پر نکلے تھے اور منزل پر پہنچنے سے پہلے ہی مارے گئے۔

نجی ٹی وی نے سیکیورٹی ذرائع کے حوالے سے دعوی کیا ہے کہ افغانستان میں کالعدم تنظیموں کے آپس کے جھگڑے میں پاکستان میں دہشتگرد حملوں کے ماسٹر مائنڈ نور گل کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا۔ نور گل پاکستان میں ہائی پروفائل دہشتگردی کی وارداتوں میں ملوث رہا ہے۔ وہ اسلام آباد ہائیکورٹ خودکش حملے کا ماسٹر مائنڈ تھا اور شاہ نورانی مزار پر خودکش حملے میں بھی ملوث تھا۔

ذرائع نے مزید بتایا کہ کالعدم جماعت الاحرار کے مالیاتی کمیشن کے ذریعے دہشتگردوں کو پاکستان میں فنڈنگ فراہم کی جاتی تھی، دہشتگردوں کا یہ گروہ درجنوں خودکش حملوں اور ٹارگٹ کلنگ میں ملوث ہے۔ ہلاک دہشتگرد کوئٹہ میں سیکیورٹی فورسز پر حملوں میں بھی ملوث رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں