ترکی میں استنبول حملوں کی منصوبہ بندی کرنے والا داعش کا بمبار گرفتار

استنبول (ڈیلی اردو/شِنہوا) ترک پولیس نے ملک کے سب سے بڑے شہر استنبول سے بم بنانے کے ماہر دولت اسلامیہ (داعش) کے ایک مشتبہ سینئر رکن کو دہشتگرد حملوں کے منصوبوں سمیت گرفتار کر لیا ہے۔

سرکاری نشریاتی ادارے ٹی آر ٹی نے پیر کے روز اپنی رپورٹ میں بتایا کہ مشتبہ شخص کو گرفتار کرنے کیلئے کارروائی محکمہ پولیس استنبول کے انسداد دہشتگردی دستہ نے کی، مشتبہ شخص امریکہ کو بھی مطلوب ہے۔

اس میں بتایا گیا ہے کہ یہ بمبار 1999ء میں مصر میں پیدا ہوا اسے شہر کے یورپی حصے کے ضلع اسنیورت میں ایک کارروائی کے دوران پکڑا گیا ہے۔

مشتبہ شخص نے مبینہ طور پر شام میں داعش میں شمولیت اختیار کی تھی اور اسے بارودی مواد، خودکش جیکٹیں اور ہاتھ سے تیار کردہ بم بنانے میں مہارت حاصل تھی۔

ٹی آر ٹی کے مطابق شام چھوڑنے کے بعد وہ پہلے مصر گیا اور پھر ترکی پہنچا تھا، ملزم انٹرنیٹ کے ذریعے داعش کے ممبران کو بم سازی اور کیمسٹری کی تربیت دیتا ہے۔

نشریاتی ادارے کے مطابق ترک خفیہ اداروں کو پتہ چلا ہے کہ وہ استنبول میں سیکورٹی فورسز، عام شہریوں اور امریکہ سے تعلق رکھنے والے کچھ اداروں پر حملوں کی منصوبہ بندی کر رہا ہے۔

داعش کو 2015 کے بعد سے ترکی میں جان لیوا حملوں کے سلسلے کا ذمہ دار ٹھہرایا جاتا ہے۔ اس کے بعد سے ترکی کے انسداد دہشتگردی دستے ملک بھر میں گروہ کے ارکان کیخلاف کارروائیاں کر رہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں