اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی فلسطینی بچہ چل بسا

غزہ (ڈیلی اردو) اسرائیلی فوج کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا 12 سالہ فلسطینی بچہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے ہسپتال میں چل بسا۔

غزہ کی فلسطینی وزارت صحت کے مطابق عمر حسن ابو النائل کو گزشتہ ہفتے کے روز ایک مظاہرے کے دوران اسرائیلی فوجی نے گولی مار دی تھی جس کے نتیجے میں وہ شدید زخمی ہوگیا تھا۔

غزہ کی سرحد پر اسرائیلی فوج کی جانب سے فائرنگ کے واقعہ میں 21 اگست کو تقریبا 40 فلسطینی زخمی ہوگئے تھے جس میں ایک شخص بدھ کے روز نجی ہسپتال میں دم توڑ گیا تھا۔

اس مظاہرے کے دوران ایک اسرائیلی فوجی کو بھی گولی مار کر زخمی کر دیا گیا تھا جس کی حالت تشویشناک ہے۔

ان جھڑپوں کے بعد غزہ پر تین میزائل داغے گئے جن کی مدد سے اسرائیلی فوج کے مطابق حماس کے ٹھکانوں کو نشانہ بنایا گیا۔

اس کے علاوہ اسرائیلی فوج نے پیر اور منگل کی درمیانی شب کو بھی غزہ پر بمباری کی تھی جس میں کسی شخص کے زخمی ہونے کی اطلاعات موصول نہیں ہوئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں