کراچی میں پولیس افسر کی ٹارگٹ کلنگ

کراچی (ڈیلی اردو) کراچی: منگھوپیر تھانے کے انوسٹی گیشن آفیسر اکرم خان کو گزشتہ رات فائرنگ کرکے ہلاک کردیا گیا۔

پولیس حکام کے مطابق دارالحکومت کراچی کے علاقے اورنگی ٹاؤن کے گلشن بہار کی مارکیٹ میں اسسٹنٹ سب انسپکٹر اکرم خان کو اس وقت ٹارگٹ کلنگ کانشانہ بنایا گیا جب وہ ساتھی اہلکار اے ایس آئی ظفر کے ساتھ ہوٹل میں بیٹھا تھا، اسی دوران شلوار قمیض پہنے ایک ملزم نے دو پستولوں سے ہوٹل میں داخل ہو کر دونوں اہلکاروں پر فائرنگ کر دی۔

واقعہ کی سی سی ٹی وی فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ ملزم کی فائرنگ سے اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) اکرم زخمی ہو کر گر گیا جبکہ ساتھی اسسٹنٹ سب انسپکٹر (اے ایس آئی) ظفر پر حملہ آور نے متعدد گولیاں چلائیں لیکن وہ بال بال بچ گیا۔

پولیس کا بتانا ہے کہ اے ایس آئی اکرم کو طبی امداد کے لیے عباسی شہید ہسپتال منتقل کیا جا رہا تھا لیکن وہ راستے میں ہی زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گیا۔

واقعہ کی اطلاع ملتے ہی اعلیٰ پولیس حکام اور رینجرز کی نفری موقع پر پہنچ گئی اور جائے وقوعہ سے شواہد اکٹھے کرکے تفتیش شروع کر دی گئی ہے۔ جائے وقوعہ سے پستول کے 8 خول ملے ہیں۔

پولیس کے مطابق مقتول اور اس کا ساتھی اہلکار منگھوپیر تھانے کے شعبہ تفتیش میں تعینات تھے اور مقتول کا آبائی تعلق صوبہ خیبر پختونخوا کے ضلع مانسہرہ سے ہے۔

حملہ آوروں کی ویڈیو ایک رکشہ ڈرائیور نے بھی بنائی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ دو موٹرسائیکل سوار ملزمان ہوٹل کے باہر کھڑے ہیں، ایک ہوٹل میں داخل ہوتا ہے اور فائرنگ کر دیتا ہے اس کے بعد ملزمان فرار ہو جاتے ہیں۔

یاد رہے کہ تین روز قبل کورنگی میں بھی نامعلوم ملزمان نے فائرنگ کرکے پولیس اہلکار یاسر کو ہلاک کر دیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں