افغانستان کے وزیر دفاع ملا یعقوب پہلی بار منظر عام پر آگئے

کابل (ڈیلی اردو) افغانستان کے قائم مقام وزیر دفاع ملا یعقوب پہلی بار منظر عام پر آگئے ہیں۔

افغان میڈیا کے مطابق طالبان کے بانی ملا عمر کے بیٹے ملا یعقو ب کی پہلی ویڈیو طالبان نے جاری کردی ہے۔

طالبان کی جانب سے جاری کردہ ویڈیو میں ملا یعقوب نے کہا کہ افغانستان کی نئی حکومت کو درپیش مسائل کے حل کے لئے عوام متحد ہوں۔

ملا یعقوب کو جاننے اور قریب سے دیکھنے والوں کا کہنا ہے کہ ان کی عمر تقریباً 27 سال ہے اور انہوں نے ابتدائی دینی تعلیم پاکستان کے مدارس میں حاصل کی ہے۔

واضح رہے کہ ملا یعقوب کے جوان ہونے کی وجہ سے یہ خیال کیا جا رہا تھا کہ شاید ان کا سیاسی اور جنگی امور میں تجربہ اتنا زیادہ نہیں لیکن توقع تھی کہ ملا محمد عمر کے بیٹے ہونے کے ناطے طالبان کے فوجی کمانڈرز اور سیاسی رہنما ان کی اطاعت کریں گے۔

طالبان حکومت میں وزیر خزانہ رہنے والے ملا آغا جان معتصم، جو ملا عمر کے خاندان کے قریب سمجھے جاتے ہیں کا کہنا تھا کہ یعقوب ایک دینی عالم ہیں اور گذشتہ 19 سالوں میں وقتاً فوقتاً امریکی اور نیٹو افواج کے خلاف جنگی محاذوں پر کارروائیوں میں حصہ لیتے رہے ہیں۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں