165

آئی سی سی کا بے ضابطگیوں میں ملوث غیر ملکی لیگز پر پابندی لگانے کا فیصلہ

دبئی (ڈیلی اردو) آئی سی سی نے غیر ملکی لیگز کے معاملات درست کرنے کے لیے ورکنگ گروپ تشکیل دے دیا ہے اور بے ضابطگیوں میں ملوث لیگز کے خلاف کریک ڈاون کرتے ہوئے ان پر پابندی لگا دی جائے گا۔

دنیا بھر میں ہونے والی ٹی ٹوئنٹی لیگز پر انٹر نیشنل کرکٹ کونسل نے تشویش ظاہر کی ہے اور کہا ہے کہ لیگز میں کرپشن کو روکنا آئی سی سی کے لئے بڑا چیلنج ہے۔

دنیا میں ہونے والی کچھ لیگز کا ڈھانچہ اور مالی معاملات ناقص ہیں اور یہ لیگز زیادہ عرصے نہیں چل سکتیں۔

گزشتہ روز آئی سی سی نے غیر ملکی لیگز پر پالیسی بیان جاری کیا جس میں براہ راست کسی لیگ کا نام لینے سے گریز کیا گیا لیکن میڈیا رپورٹس کے مطابق ٹی ٹین لیگ، بنگلا دیش پریمیئر لیگ اور افغان لیگ کے مالی معاملات ٹھیک نہیں ہیں۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ رکن ملکوں کی درخواست پر مختلف لیگز کے معاملات کو دیکھنے کے لیے ایک ورکنگ گروپ تشکیل دیا ہے۔ورکنگ گروپ غیر ملکی لیگز کے قواعد وضوابط بنائے گا اور تمام لیگز کو ان قواعد وضوابط کو پورا کرنا ہو گا ورنہ ان لیگز کو این او سی جاری نہیں کیا جائیگا۔

آئی سی سی کے سی ای او ڈیو رچرڈسن نے بھارتی میڈیا کے اس تاثر کو مسترد کر دیا کہ آئی سی سی آئی پی ایل پر کریک ڈاون کر رہا ہے۔رچرڈسن کا کہنا ہے کہ ورکنگ گروپ کسی لیگ کے خلاف کریک ڈاون نہیں بلکہ رکن ملکوں کی درخواست پر بنایا جا رہا ہے۔

آئی سی سی کا کہنا ہے کہ غیر ملکی لیگز کی وجہ سے ہمیں انٹر نیشنل کلینڈر بنانے میں مشکل پیش آ رہی ہے، دنیا کے بڑے کھلاڑی ان لیگز میں چلے جاتے ہیں، لیگز کے کمزور ڈھانچے اور ناقص مالی معاملات کی وجہ سے مشکلات پیش آ رہی ہیں اور کھیل کی ترقی نہیں ہو رہی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں