166

پنجاب اور سندھ میں کالعدم تنظیموں کیخلاف کریک ڈاؤن، مدارس حکومتی تحویل میں، 60 گرفتار

لاہور (ڈیلی اردو) پنجاب میں کالعدم تنظیموں کے خلاف کریک ڈاؤن کے نتیجے میں درجنوں کارکنوں کو گرفتار کرلیا گیا جب کہ متعدد مساجد، مدرس اور طبی مراکز کو بھی حکومتی تحویل میں لے لیا گیا ہے۔

نیشنل ایکشن پلان کے تحت ملک بھر کالعدم تنظیموں کے خلاف کارروائیاں جاری ہیں، ذرائع کے مطابق لاہور میں حساس اداروں اور سی ٹی ڈی نے کارروائی کے دوران جماعت الدعوۃ اور جیش محمد سمیت دیگر کالعدم تنظیموں کے 60 سے زائد کارکنوں کو گرفتار کرلیا جب کہ جماعت الدعوۃ کے مزید 16 مدرسوں اور 9 ڈسپنسریز کا کنٹرول بھی حکومت نے سنبھال لیا ہے۔

ذرائع کے مطابق مرید کے اور پاکپتن میں 8، 8 مدرسوں کو سرکاری تحویل میں لیا گیا جب کہ پاک پتن میں جماعت الدعوہ کی 7 اور رینالہ خرد میں 2 ڈسپنسریز کو سرکاری تحویل میں لیا گیا۔

ادھر کراچی میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت تحویل میں لئے جانے والے مدارس پر محکمہ اوقاف نے اپنے بورڈ لگا دیئے۔

کراچی کے مدارس جامعتہ الایمان ناظم آباد، مدرسہ ریاض الجنہ، جامعہ الدرسات الاسلامیہ گلشن اقبال، مدرسہ معاذ بن جبل ملیر، جامع مسجد حنین قائد آباد کا انتظام محکمہ اوقاف نے سنبھال لیا ہے۔

سندھ حکومت نے تین روز کے دوران دس سے زائد مدارس و اسکول کو تحویل میں لیا۔ سندھ میں نیشنل ایکشن پلان کے تحت فلاح انسانیت فاؤنڈیشن اور جماعت الدعوۃ کے زیر انتظام 56 مدارس، اسکول و اسپتال تحویل میں لئے جارہے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں