218

کلاچی آپریشن: ہلاک 5 دہشت گردوں کی شناخت، 50 لاکھ سر کی قیمت والے لشکر جھنگوی کے کمانڈر شامل

اسلام آباد (ش ح ط) خیبر پختونخوا کے علاقے ضلع ڈیرہ اسماعیل خان کی تحصیل کلاچی میں سیکیورٹی فورسز پر حملے میں ملوث 5 دہشت گردوں کی شناخت کر لی گئی۔ ہلاک ہونے والوں میں ایک دہشت گرد کے سر کی قیمت 50 لاکھ روپے مقرر تھی۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتے ڈیرہ اسماعیل خان کی تحصیل کلاچی کے علاقے باچہ آباد میں سیکورٹی فورسز اور پولیس کے مشترکہ سرچ آپریشن میں دہشت گروں سے فائرنگ کے تبادلے میں ایک خاتون سمیت 5 دہشت گرد ہلاک ہو گئے تھے۔

سیکیورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ فورسز کے ساتھ مقابلے میں 50 لاکھ روپے سر کی قیمت والا دہشت گرد اسماعیل بنگلی بھی شامل ہے۔ اسماعیل بنگلی لشکر جھنگوی کا اہم کمانڈر تھا۔ پنجاب حکومت نے اُس کے سر کی قیمت 50 لاکھ روپے مقرر کر رکھی تھی۔

فورسز کے آپریشن میں دیگر ہلاک ہونے والے جن دہشت گردوں کی شناخت ہوئی ہے ان میں محمد جاوید ولد غلام فرید سکنہ پکہ ملانا ڈیرہ اسماعیل خان، حسیب الرحمان ولد حفیظ الرحمان سکنہ تونسہ شریف ضلع ڈیرہ غازی خان اور محمد عبداللہ ولد اللہ دتہ سکنہ تونسہ شریف ڈیرہ غازی خان اور 18 سالہ خاتون دہشت گرد شریفاں بی بی شامل ہے۔

پولیس حکام کے مطابق سیکیورٹی فورسز، سی ٹی ڈی اور پولیس کا مشترکہ آپریشن جنگلوں میں دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر کیا گیا، اس دوران دہشت گردوں نے سیکیورٹی فورسز پر فائرنگ کردی اور جوابی فائرنگ میں ایک خاتون سمیت پانچ دہشت گرد مارے گئے۔

سیکیورٹی ذرائع کے مطابق ہلاک دہشت گردوں کا تعلق کالعدم تنظیم لشکر جھنگوی سے تھا۔

سی ٹی ڈی کے مطابق ہلاک دہشت گردوں پر پولیس موبائل اور سیکیورٹی فورسز پر حملوں کے 8 مقدمات درج تھے، جبکہ ہلاک دہشت گردوں کے قبضے سے خودکش جیکٹس، ہینڈ گرنیڈز کلاشنکوفیں، پولیس وائر لیس سیٹ اور بارود میں استعمال ہونے والے اجزاء برآمد ہوئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں