مولوی خادم حسین رضوی سمیت7 ملزمان کو مزید 10 روزہ جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا گیا

لاہور (ویب ڈیسک) انسداد دہشت گردی عدالت نے تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ مولوہ خادم حسین رضوی اور دیگر رہنماؤں کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید 10 روز کی توسیع کردی۔

لاہور کی انسداد دہشت گردی عدالت میں املاک کو نقصان پہنچانے اور توڑ پھوڑ کے خلاف کیس پر سماعت ہوئی۔

جیل حکام نے تحریک لبیک پاکستان کے سربراہ علامہ خادم حسین رضوی خادم حسین رضوی، پیر افضل قادری، پیر اعجاز اشرفی، فاروق الحسن، شفقت جمیل، وحید نور اور پیر ظہیرالحسن کو انسداد دہشت گردی عدالت کے منتظم جج شیخ سجاد کے روبرو پیش کیا۔

خادم حسین رضوی سمیت تمام ملزمان کو 4 روزہ جوڈیشل ریمانڈ ختم ہونے پر عدالت میں پیش کیا گیا۔

عدالت نے علامہ خادم حسین رضوی اور دیگر ملزمان کے جوڈیشل ریمانڈ میں مزید 10 روز کی توسیع کر دی۔

عدالت میں پیش کیے گئے ملزمان میں خادم حسین رضوی کے علاوہ افضل قادری، پیر اعجاز اشرفی، فاروق الحسن، شفقت جمیل، وحید نور اور پیر ظہیرالحسن شامل تھے۔

اس موقع پر انسداد دہشت گردی عدالت کے باہر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے اور پولیس کی بھاری نفری عدالت کے باہر موجود تھی۔

واضح رہے کہ گزشتہ سال توہین مذہب کے مقدمے میں مسیحی خاتون آسیہ بی بی کو رہا کیے جانے کے سپریم کورٹ کے فیصلے خلاف تحریک لبیک پاکستان کے پرتشدد مظاہروں کے دوران املاک کو نقصان اور توڑ پھوڑ کی گئی تھی۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں