179

آئی ایم ایف پاکستان کو کتنے بلین ڈالر کا قرضہ دینے پر رضامند ہو گیا: تفصیلات سامنے آگئی

اسلام آباد (ویب ڈیسک) پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان اہم معاملات پر اتفاق ہوگیا، آئی ایم ایف پاکستان کو چھ ارب ڈالر قرضہ فراہم کرنے کیلئے تیار ہیں‌ ، معاہدہ آئندہ دو ماہ میں طے پا جائےگا ۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان پروگرام پر مثبت پیش رفت سامنے آئی اور حکومت اور آئی ایم ایف کے درمیان بیشتر اہم معاملات پر اتفاق ہوگیا، اہم پیش رفت وزیر اعظم عمران اور آئی ایم ایف کی سربراہ کی ملاقات میں ہوئی۔

آئی ایم ایف پروگرام کوآئندہ مالی سال کے بجٹ کا حصہ بنایا جائےگا

آئی ایم ایف پاکستان کو چھ ارب ڈالر فراہم کرنے کیلئے تیار ہے ، آئی ایم ایف کی سربراہ کرسیٹن لگارڈ کا کہنا ہے کہ آئی ایم ایف پاکستان کی مدد کیلئےتیارہے تاہم کچھ اہم اقدامات ضروری ہیں، پروگرام کے تحت حکومت کو معاشی اصلاحات کرناہوں گی۔

وزارت خزانہ زرائع کے مطابق پاکستان اور آئی ایم ایف کے درمیان معاہدہ اپریل تک متوقع ہے، آئی ایم ایف پروگرام کوآئندہ مالی سال کے بجٹ کا حصہ بنایا جائےگا، ویڈیو لنک کے ذریعے روان ہفتے بھی مذاکرات کا عمل جاری رہے گا۔

یاد رہے گذشتہ روز وزیراعظم عمران خان سے آئی ایم ایف کی منیجنگ ڈائریکٹر کرسٹین لگارڈ سے ملاقات ہوئی تھی ، جس میں آئی ایم ایف کو پاکستان کے موقف سے آگاہ کیا گیا اور اہم معاملات پراتفاق ہوا تھا۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ ملک میں پائیدار ترقی کے لیے اصلاحات ضروری ہیں، اصلاحاتی عمل میں کم آمدن والوں کو تحفظ ملے گا۔

بعد ازاں وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے دبئی میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا تھا کہ وزیراعظم عمران خان کی آئی ایم ایف چیف کرسٹین لگارڈ سے ملاقات مفید رہی ہے، آئی ایم ایف کے ساتھ بنیادی نکات پر اتفاق رائے ہوگیا ہے۔

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ خوشی ہے ہماری اور آئی ایم ایف کی سوچ میں مطابقت پائی جاتی ہے، عنقریب ایسا پروگرام لائیں گے، جس سے کم آمدن والے طبقات کا تحفظ ہو۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں