163

ملائیشیا میں بھی پاکستانی لائسنس کے حامل تمام پائلٹ عارضی طور پر معطل

کوالالمپور (ڈیلی اردو/آن لائن) ملائیشیا میں ہوا بازی ریگولیٹری اتھارٹی نے پاکستانی لائسنس کے حامل ڈومیسٹک ایئرلائنز کے تمام پائلٹوں کو عارضی طور پر معطل کردیا ہے۔

ملائیشیا میں ہوا بازی ریگولیٹری اتھارٹی نے پاکستانی لائسنس کے حامل ڈومیسٹک ایئرلائنز کے تمام پائلٹوں کو عارضی طور پر معطل کردیا ہے۔ یہ فیصلہ جنوبی ایشیائی ملک کی حکومت کی طرف سے چند پاکستانی پائلٹس کی قابلیت مشکوک ہونے کے بارے میں کیے گئے انکشاف کے تناظر میں کیا گیا ہے۔

ملائیشیا کی سول ایوی ایشن اتھارٹی) سی اے اے ایم (نے ایک بیان میں کہا کہ یہ فیصلہ دراصل ملائیشیا میں کام کرنے والے تمام غیر ملکی پائلٹس کی قابلیت کے بارے میں کروائی جانے والی تازہ ترین چھان بین کے بعد کیا گیا۔ اس اتھارٹی نے روئٹرز کو بتایا کہ ملائیشیا میں اس وقت تقریبا 20 پاکستانی پائلٹس کام کر رہے ہیں۔

دریں اثنا نیشنل کیریئر ملائیشیا ایئر لائنز، ملینڈوایئر اور انڈونیشیا کی لائنز ایئر کی ملائیشین شاخ نے کہا کہ ان کے پاس کوئی غیر ملکی پائلٹ نہیں ہے جبکہ ایئر ایشیا کا کہنا تھا کہ اس کے پاس بھی پاکستانی لائسنس کا حامل کوئی پائلٹ نہیں ہے۔

ملائیشیا کی سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے ایم) نے کہا کہ پاکستانی پائلٹس کو دراصل مقامی آپریٹرز جیسے کہ فلائنگ اسکولز، فلائنگ کلبز اور تربیتی تنظیموں نے نوکریاں دی ہوئی تھیں۔

پاکستان نے پچھلے ہفتے اپنے پائلٹس میں سے ایک تہائی کو لائسنسوں کے جعلی ہونے کے انکشاف کے بعد معطل کر دیا تھا۔ پاکستان کے پاس کل 860 پائلٹس ہیں، جن میں سے 107 غیر ملکی ایئر لائنز کے ساتھ منسلک ہیں۔ اس اعلان کے بعد ہی عالمی سطح پر پاکستانی پائلٹس کی قابلیت کے بارے میں تشویش میں غیر معمولی اضافہ ہوا اور ساتھ ہی ملک کی ساکھ کو بھی نقصان پہنچا ہے۔

ملائیشیا کی سول ایوی ایشن اتھارٹی نے کہا ہے کہ وہ پاکستان کی سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ساتھ رابطے میں ہے تاکہ ان پائلٹس کے لائسنس کی تصدیق کی جا سکے۔

بیان کے مطابق ‘پاکستان کی سول ایوی ایشن اتھارٹی جن پائلٹس کے لائسنس کی تصدیق کرے گی ان کو فوری طور پر بحال کر دیا جائے گا۔’

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں