375

کراچی میں رینجرز اور پولیس کی مشترکہ کارروائی، کالعدم تنظیم کے دو ٹارگٹ کلر گرفتار

کراچی (ڈیلی اردو) سندھ رینجرز اور پولیس نے انٹیلی جنس معلومات کی بنیاد پر مشترکہ کارروائی کرتے ہوئے ٹارگٹ کلنگ میں ملوث 2 ملزمان کو گرفتار کرلیا۔

تفصیلات کے مطابق 2 جولائی 2020ء کو کراچی کے علاقے لیاقت آباد نمبر 10 میں پاک سر زمین پارٹی (پی ایس پی) کے کارکن عاصم محمد خان کو قتل کر دیا گیا تھا۔قتل کی ایف آئی آر پولیس اسٹیشن شریف آباد میں نامعلوم ملزمان کے خلاف درج کی گئی تھی۔

واقعے کی اطلاع ملتے ہی پاکستان رینجرز (سندھ) نے تحقیقات کے لیے خصوصی ٹیم تشکیل دی۔ اس اندھے قتل میں ملوث ملزمان سید نعیم حیدر عرف بڑا اور محمد دانش اقبال عرف ہکلہ کو 48 گھنٹے سے بھی کم وقت میں گرفتار کر لیا گیا جبکہ ملزمان کا تیسرا ساتھی موقع سے فرار ہو گیا جس کی گرفتاری کے لیے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔

ملزمان کے قبضے سے قتل کی واردات میں استعمال ہونے والا 30 بور کا پسٹل بھی برآمد کر لیا گیا ہے، جس کی فرانزک رپورٹ اور موقع واردات سے ملنے والے خول سے تصدیق ہوگئی ہے۔

ابتدائی تفتیش کے دوران ملزم سید نعیم حیدر عرف بڑا نے انکشاف کیا ہے کہ اس کا تعلق کالعدم تنظیم سے ہے اور وہ اس سے قبل بھی فرقہ ورانہ ٹارگٹ کلنگ میں ملوث رہا ہے۔ گرفتار ملزمان کو قانونی کارروائی کے لیے پولیس کے حوالے کر دیا گیا ہے۔

سندھ رینجرز کی جانب سے عوام سے اپیل کی گئی ہے کہ مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث عناصر کے بارے میں فوری طور پر قریبی چیک پوسٹ، رینجرز ہیلپ لائن 1101 یا رینجرز مددگار واٹس ایپ نمبر 03479001111 پر کال یا ایس ایم ایس کے ذریعے اطلاع دیں، آپ کا نام صیغۂ راز میں رکھا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں