138

اسرائیلی جارحیت، امریکی پالیسیاں حظے میں قیام امن کیلئے سب سے بڑا خطرہ ہیں: ایران

میونخ (ویب ڈیسک) ایران نے خبردار کیا ہے کہ اسرائیل مشرق وسطیٰ میں جنگ کے لیے پر تول رہا ہے جس سے خطے کا امن خطرے میں پڑ جائے گا۔

بین الاقوامی خبر رساں ادارے کے مطابق ایرانی وزیر خارجہ جواد ظریف نے جرمنی میں سیکیورٹی کانفرنس سے خطاب میں انکشاف کیا ہے کہ اسرائیل مشرق وسطیٰ میں جنگ برپا کرنا چاہتا ہے، امریکی پالیسیاں اور اسرائیلی کے عزائم خطے کے امن کے لیے خطرہ بن گئی ہیں۔

وزیر خارجہ جواد ظریف نے مزید کہا کہ اسرائیلی طیارے بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شام میں ایرانی تنصیبات کو مسلسل نشانہ بنا رہے ہیں جس پرعالمی قوتوں کی خاموشی مجرمانہ عمل ہے، اسرائیلی جارحیت کو امریکی حمایت حاصل ہے جس سے طاقت کے توازن میں بگاڑ پیدا ہو رہا ہے۔

ایرانی وزیرخارجہ نے صدر ٹرمپ کی پالیسیوں کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ امریکا خود تو جوہری توانائی کے معاہدے سے دست بردار ہوچکا ہے اور دیگر یورپی ممالک کو بھی معاہدے سے انخلاء پر مجبور کر رہا ہے، امریکا کو اپنی پالیسیوں پر نظر ثانی کرنا ہو گی۔

واضح رہے کہ اسرائیل پاس داران انقلاب پر حدود کی خلاف ورزی کا الزام عائد کر کے شام میں ایرانی تنصیبات کو نشانہ بناتے آیا ہے جبکہ امریکا کی جوہری توانائی کے معاہدے سے دست برداری کے بعد ایران سے تعلقات نہایت کشیدہ ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں