فوج نے اسد درانی کی پنشن، مراعات روک دیں، فوج کے سینئر افسران زیرحراست

راولپنڈی (ڈیلی اردو) ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ فوجی ضابطہ کی خلاف ورزی پر اسد درانی کی پنشن اور دیگر مراعات روک دی گئی ہیں۔

راولپنڈی میں پریس بریفنگ دیتے ہوئے میجر جنرل آصف غفور کا کہنا تھا کہ جنرل (ر) اسد درانی کی ملٹری کوڈ آف کنڈکٹ کی خلاف ورزی پر انکوائری ہورہی تھی، فوجی ضابطہ کی خلاف ورزی پر اسد درانی کی پنشن اور دیگر مراعات روک دی گئی ہیں جب کہ دو سینیر افسران کے خلاف قانونی کارروائی کی جارہی ہے، دونوں افسران کا کورٹ مارشل کیا جائے گا۔

واضح رہے کہ سابق ڈی جی آئی ایس آئی جنرل (ر) اسد درانی نے بھارتی خفیہ ایجنسی ’را‘ کے سربراہ اے ایس دولت کے ساتھ ’دا اسپائی کرونیکلز‘ کے نام سے کتاب لکھی ہے جس میں ایبٹ آباد آپریشن، مقبوضہ کشمیر اور کارگل سمیت دیگر معاملات کو بیان کیا گیا ہے۔

کتاب منظر عام پر آنے کے بعد پاک فوج کی جانب سے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے سابق ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل (ر) اسد درانی کو اپنے بیانات پر پوزیشن واضح کرنے کے لیے جی ایچ کیو طلب کیا گیا تھا

جس کے بعد پاک فوج نے معاملے کی تفصیلی تحقیقات کے لیے اسد درانی کے خلاف کورٹ آف انکوائری کا حکم بھی دیا تھا۔ لیکن ان کا رینک برقرار رہےگا،

میجر جنرل نے مزید کہا کہ جنرل (ر) اسد درانی کا نام ای سی ایل پر ہے، وزارت داخلہ سے بات کریں گے۔

ڈی جی آئی ایس پی میجر جنرل آصف غفور نے پاک فوج کے 2 سینئرافسران کے زیرحراست ہونے کی تصدیق کرتے ہوئے کہا دونوں سینئر افسران کا فیلڈ کورٹ مارشل آرمی چیف نے آرڈر کیا ہوا ہے، دونوں سینئر افسران کے خلاف قانونی کارروائی جاری ہے، کورٹ مارشل مکمل ہونے کے بعد میڈیا کو تفصیل سے آگاہ کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں