لاہور آپریشن کی خبروں پر پابندی: صحافی تنظیم پی ایف یو جے کا حکومت سے اہم مطالبہ

اسلام آباد (ڈیلی اردو) پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس (پی ایف یوجے) کی لاہور میں ہونے والے واقعات سے متعلق نشرواشاعت کی مذمت، صدر پی ایف یو جے کا کہنا تھا کہ پابندی سے حقائق سامنے نہیں آرہے، افواہیں گردش کررہی ہیں جس کے باعث صورت حال مزید سنگین ہورہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس (پی ایف یوجے) نے حکومت پر واضح کیا کہ ایک مذہبی گروپ (کالعدم تحریک لبیک) کے احتجاج کو روکنے کے لئے پولیس آپریشن اور مظاہرین کی مزاحمت کی کوریج پر پابندی سے جنم لینے والی افواہیں ملکی امن و سلامتی کے لئے نقصان دہ ہیں، صحافیوں کو حقائق رپورٹ کرنے کا حق ہے جس کو غصب نہیں کیاجاسکتا۔ صدر پی ایف یو جے شہزادہ ذوالفقار اور سیکرٹری جنرل ناصر زیدی نے جاری مشترکہ بیان میں کہا کہ حکومت کی طرف سے مذہبی دھرنوں کو روکنے پولیس آپریشن کے نتیجے میں پیدا ہونے والی صورت حال پر پابندی لگانے سے حالات اور خراب ہورہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اس سے نہ صرف مسائل بڑھ رہے ہیں بلکہ حکومت مخالف جذبات کو بھی ہوا ملے گی،اس سے لوگوں کے حقائق جاننے کی آزادی کو بھی نقصان پہنچا ہے، لاہور آپریشن کی خبروں پر پابندی کی وجہ سے پھیلنے والی افواہوں کے اثرات پنجاب کے کئی علاقوں میں نظر آرہے ہیں، پی ایف یوجے کی قیادت نے حکومت سے اپیل کی کہ خبروں کی نشرواشاعت پرلگی پابندی کا فیصلہ واپس لیاجائے کیونکہ اس سے میڈیا ورکرز کے لئے بھی پریشانی بڑھ رہی ہے۔

ان کا مزید کہناتھا کہ آزادی صحافت کے حوالے سےحکومت کے بلندوبانگ دعوؤں کے مقابلہ میں جس طرح کی روکاٹیں کھڑی کی جارہی ہیں ہم سمجھتے ہیں کہ صورت حال انتہائی حساس ہے لیکن کسی بھی طرح کا میڈیا بلیک آؤٹ جیسا اقدام صورت حال کومزید سنگین بنادے گا، لہذا حکومت ایسی تمام پابندیوں کا فیصلہ فوری واپس لے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں