بلوچستان: سرینا ہوٹل میں خودکش کار بم دھماکا، 5 افراد ہلاک، اسسٹنٹ کمشنرز سمیت 12 افراد زخمی

اسلام آباد (ش ح ط) صوبہ بلوچستان کے صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں سرینا ہوٹل میں ہونے والے خودکش کار بم دھماکے میں ابتک پانچ افراد ہلاک اور 12 افراد زخمی ہوگئے ہیں۔

ہائی سکیورٹی زون میں واقع سرینا ہوٹل کے اندر خودکش کار بم دھماکا ہوا جس کے بعد فائرنگ بھی کی گئی، واقعے میں اب تک پانچ افراد ہلاک اور بارہ زخمی ہو گئے۔ پولیس ذرائع کے مطابق ہلاک ہونے والوں میں پولیس اہلکار شجاعت عباسی، کانسٹیبل شازیب، ایمل کاسی، اسد خروٹی، نصیب اللہ نورزئی شامل ہیں جبکہ زخمیوں میں اسسٹنٹ کمشنر کوئٹہ اعجاز احمد اور اسسٹنٹ کمشنر جعفر آباد بلال شبیر شامل ہے۔

معتبر ذرائع کے مطابق ہوٹل میں چینی سفیر اور چینی وفد اور دیگر ارکان ایک اجلاس کے سلسلے میں موجود تھے تاہم وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد نے نجی ٹی وی سما نیوز سے بات کرتے ہوئے تصدیق کی کہ چینی سفیر اس ہوٹل میں ٹھہرے ہوئے تھے، تاہم وہ دھماکے کے وقت وہاں موجود نہیں تھے۔

دوسری جانب کالعدم تحریک طالبان پاکستان (ٹی ٹی پی) نے اس حملے کی ذمے داری قبول کی ہے۔

ٹی ٹی پی ‏ترجمان محمد خراسانی نے نے دعویٰ کیا ہے کہ خودکش حملہ آور کا نام محمد عباس عرف فاروق تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں