20

اسلامی انقلاب سالگرہ: ایران میں ہزاروں قیدیوں کیلئے عام معافی کا اعلان

تہران (ڈیلی اردو/رائٹرز) ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنائی نے جیلوں میں موجود ہزاروں قیدیوں کے لیے عام معافی کا اعلان کر دیا۔

عالمی خبر رساں ایجنسی رائٹرز کے مطابق سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنائی کے حکم پر تقریباً دس ہزاروں قیدیوں کو رہا کیا جائے گا۔

سپریم لیڈر کی جانب سے مذکورہ اعلان ایران میں جاری حکومت مخالف مظاہروں کے دوران سامنے آیا ہے جن میں متعدد اموات بھی ہوئیں۔

رہائی کے حکم نامے کے ساتھ کچھ شرائط بھی ہیں جن میں ایک کے مطابق ان قیدیوں کو ہرگز رہائی نہیں ملے گی جو دوہری شہریت رکھتے ہیں۔

شرائط کے مطابق کرپشن میں ملوث مجروموں کو معاف نہیں کیا جائے گا جن میں سے چار کو حال میں پھانسی دی گئی۔

سپریم لیڈر آیت اللہ علی خامنائی کا حکم ان پر بھی لاگو نہیں ہوگا جو غیر ملکی ایجنسیوں کے لیے جاسوسی کرنے میں ملوث پائے گئے یا پھر ملک مخالف گروہوں سے وابستہ ہیں۔

گزشتہ سال ستمبر میں ایک ایرانی خاتون کا پولیس حراست میں انتقال ہوا تھا جس کے بعد وہاں حکومت مخالف مظاہرے شروع ہوئے۔

حکومت نے کریک ڈاؤن کرتے ہوئے کم از کم 20 ہزار مظاہرین کو گرفتار کیا جو اب بھی جیلوں میں ہیں۔

سپریم لیڈر کی طرف سے معافی کا اعلان 1979 کے اسلامی انقلاب کی سالگرہ کے اعزاز میں کیا گیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں