310

بیٹے کے قتل کا کیس واپس لینے کیلئے دھمکیاں دی جارہی ہیں: میاں افتخار حسین

پشاور (ڈیلی اردو) عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی جنرل سیکرٹری میاں افتخار حسین نے کہا ہے کہ میاں راشد شہید کے قاتل دہشتگرد کو بچانے کی کوشش کی جارہی ہے اور مجھے کیس واپس لینے کیلئے دھمکیوں کے ذریعے ڈرایا دھمکیا جا رہا ہے۔

پشاور میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عوامی نیشنل پارٹی کے مرکزی سیکرٹری جنرل میاں افتخار حسین نے کہا کہ افسوس کہ میرے بیٹے کے قاتل کو اعتراف کے باوجود رہا کرنے کی کوشش کی جارہی ہے اور مجھے بھی دھمکیاں مل رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آمریت میں بھی کبھی پارٹی الیکشن ملتوی نہیں ہوئے۔ اپریل میں صوبائی سطح پر پارٹی انتخابات ہوں گے۔ دو مئی کو مرکزی عہدیداروں کا انتخاب ہوگا۔

میاں افتخار حسین نے مزید کہا کہ دوہزار دس کے بعد سے اب تک آبائی گھر میں نہیں رہا۔ میرے بیٹے کے قاتلوں کو قرار واقعی سزا دی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں