پاکستان نے پلوامہ حملے پر بھارتی ڈوزیئر کا ابتدائی جواب بھجوا دیا

اسلام آباد (ڈیلی اردو) دفتر خارجہ سے جاری بیان کے مطابق پاکستان نے بھارتی ڈوزیئر میں دی گئی معلومات پر تحقیقات کرکے جواب دیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سیکریٹری خارجہ نے بھارتی ہائی کمشنر کو دفتر خارجہ بلا کر پاکستانی جواب ان کے حوالے کیا۔

وزیراعظم عمران خان نے بھارت کو پلوامہ حملہ کے بعد ٹھوس شواہد پیش کیے جانے پر تحقیقات میں مدد کی پیشکش کی تھی۔

بھارت کی طرف سے 27 فروری 2019 کو ڈوزیئر بھجوایا گیا، پاکستان نے معاملے پر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے مکمل تعاون کیا۔

ترجمان دفتر خارجہ کا کہنا تھا کہ پاکستان نے ایسا مظاہرہ خطے کے امن اور سلامتی کے لیے کیا، جبکہ پاکستان آگے بڑھنے کے لیے بھارت کی طرف سے مزید معلومات اور شواہد کا انتظار کر رہا ہے۔

یاد رہے کہ 14 فروری کو مقبوضہ کشمیر کے ضلع پلوامہ میں بھارتی فوج کے قافلے پر ہونے والے خودکش حملے میں 50 سے زائد فوجی اہلکار ہلاک ہوئے تھے۔

بھارتی حکومت اور میڈیا نے بغیر کسی تحقیقات کے اس حملے کا ملبہ پاکستان پر ڈال دیا تھے جس کے بعد دونوں ممالک کے درمیان کشیدگی میں اضافہ ہوا تھا۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں