206

سابق وزیراعلیٰ سندھ اور ‏وفاقی وزیر علی محمد مہر مبینہ ڈکیتی واردات میں زخمی

کراچی (ڈیلی اردو )سابق وزیراعلیٰ سندھ اور وفاقی وزیر علی محمد مہر کے گھر پر حملہ، حملہ ڈکیتوں کی جانب سے کیا گیا، ڈکیتی کی کاروائی کے دوران علی محمد کے سر پر بندوق کے بٹ مارے گئے، شدید زخمی حالت میں ہسپتال منتقل کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعلیٰ سندھ اور تحریک انصاف کے وفاقی وزیر نارکوٹکس سردارعلی محمد مہر کے گھر میں گھسنے والے ڈکیتوں نے انہیں زخمی کردیا۔ وفاقی وزیر کو فوری طور پر طبی امداد کے لیے اسپتال منقتل کردیا گیا ہے۔
پولیس ترجمان کے مطابق سابق وزیر اعلیٰ سندھ علی محمد مہر کے گھر پر ڈکیتی کی واردات ہوئی ۔ واردات کے دوران علی محمد مہر زخمی ہو گئے۔

ڈکیتی کی یہ واردات کراچی کے علاقے گزری میں موجود سابق وزیر اعلیٰ کے گھر پر ہوئی۔ علی محمد مہر گزشتہ الیکشن میں آزاد امیدوار کی حیثیت سے گھوٹکی سے ایم این اے منتخب ہوئے اور بعدازاں انہوں نے پی ٹی آئی میں شمولیت اختیار کر لی تھی۔

اس ضمن میں مزید تفتیش و تحقیق جاری ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں