151

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کی دفتر خارجہ طلبی، ایل او سی پر بھارتی اشتعال انگیزی پر شدید احتجاج

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفترخارجہ طلب کرکے بھارتی فوج کی جانب سے ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر بلااشتعال فائرنگ اور 4 شہادتوں پر شدید احتجاج کیا گیا۔

دفترخارجہ کی جانب سے جاری بیان میں بتایا گیا ہے کہ بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر جے پی سنگھ کو دفترخارجہ طلب کیا گیا اور بھارتی فورسز کی جانب سے کنٹرول لائن پر بلا اشتعال فائرنگ کے نتیجے میں پاک فوج کے 3 جوانوں اور ایک شہری کی شہادت پر شدید احتجاج کیا گیا۔

بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو ایک مراسلہ بھی دیا گیا جس میں کہا گیا کہ بھارتی فوج نے ایک بار پھر سیز فائر معاہدے کی خلاف ورزی کی اور بھارت کی جانب سے یکم اور 2 اپریل کو ایل او سی پر فائرنگ سے 4 شہادتیں ہوئیں، بھارتی فوجیوں نےشہریوں کی ایک بس کوبھی نشانہ بنایا۔

بیان میں کہا گیا کہ بھارتی فورسز کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پر سول آبادی کو بھاری ہتھیاروں سے نشانہ بنا رہی ہیں، سول آبادی کو جان بوجھ کر نشانہ بنانا انسانی حقوق اور بین الاقوامی قوانین کی خلاف ورزی ہے، سیز فائر کی خلاف ورزیاں خطے کی سلامتی کے لئے خطرہ ہیں۔

بھارتی حکومت اپنی افواج کو کنٹرول لائن اور ورکنگ باؤنڈری پرامن قائم رکھنے کی ہدایت کرے اور بھارت اقوام متحدہ کے مبصرین کو یو این او کی قراردادوں کی روشنی میں کردار ادا کرنے کی اجازت دے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں