208

بشریٰ بی بی سے اختلافات کی خبریں؟ بالاخر وزیر اعظم عمران خان نے خاموشی توڑ دی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک) سوشل میڈ یا پر وزیراعظم عمران خان اور خاتون اول بشریٰ بی بی کے درمیان علیحدگی کی افواہیں گرم تھیں تاہم وزیراعظم نے خود ہی وضاحت پیش کر کے تمام افواہوں کا دم توڑ دیا۔

نجی نیوز چینل دنیا نیوز کے مطابق اینکر پرسن جنید سلیم نے وزیر اعظم عمران خان کی خاتون اول سے علیحدگی کے متعلق افواہوں پر سوال کیا تو اس پر انہوں نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ اہلیہ میرے لیے خدا کی نعمت ہے ،جب تک زندگی ہے ،ساتھ رہیں گے ۔ان کا کہنا تھا کہ ازدواجی زندگی سے متعلق افواہوں میں صداقت نہیں۔

خیال رہے کہ عمران خان کی بشریٰ مانیکا سے لڑائی کی خبر سب سے پہلے چینل ٹوئنٹی فور نیوز پر پاکستان کے معروف تجزیہ نگار نجم سیٹھی نے اپنے پروگرام میں بریک کی تھی۔انہوں نے اپنے ساتھی پروگرام اینکر اسامہ ملک کو مخاطب کرتے ہوئے کہا تھا کہ ’’چڑیا کہتی ہے کہ بنی گالہ میں پھڈا پڑ گیا ہے، وہاں کام تمام ہونے والا تھا کہ کچھ لوگ بیچ میں پڑے اور معاملے کو ٹھنڈا کیا‘‘۔

اگرچہ نجم سیٹھی نے عمران خان یا بشریٰ مانیکا میں سے کسی کا بھی نا م نہیں لیا تھا تاہم خبروں کے قارئین اور ناظرین کا ماننا ہے کہ نجم سیٹھی بنی گالہ میں عمران خان اور بشریٰ مانیکا کے حوالے سے ہی بات کر رہے تھے۔ اس خبر کے بریک ہونے کے فوری بعد ہی حکومتی ایوانوں میں تھرتھلی مچ گئی تھی جس کے بعد چینل ٹوئنٹی فور کی انتظامیہ نے دعویٰ کیا کہ ان کے چینل کی نشریات پاکستان کے مختلف شہروں میں بند کروا دی گئی ہے۔ بعد ازاں 24 نیوز کی نشریات پانچ روز بعد بحال کردی گئی۔

ٹوئنٹی فور نیوز چینل کی بندش پر معروف خاتون صحافی گل بخاری نے بھی نجم سیٹھی کو طنزیہ قسم کا مشورہ دیا ہے۔

صحافی احمد نورانی نے لکھا ہے کہ ’’یہ سوچ کر بھی افسوس ہوتا کہ ہر کسی کو ہر وقت ماں بہن کی گالیاں نکالنے اور کرپٹ ہونے کے الزامات لگانے والے ہمارے پی ٹی آئی کے سپورٹرز اب محترمہ بشری بی بی کو بھی گالیاں نکالیں گے اور ان کی ذات پر طرح طرح کے الزام لگائیں گے. یا اللہ رحم فرما‘‘

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں