اختلافات ختم: طالبان اور امریکا افغانستان سے غیر ملکی افواج کے انخلاء پر متفق

کابل (مانیٹرنگ ڈیسک) افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کے لیے راہیں ہموار ہونے لگیں، طالبان نے فریقین کے درمیان اختلاف ختم ہونے کا دعویٰ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق طالبان نے اعلان کیا ہے کہ افغانستان سے امریکی فوج کے انخلا کے معاملے پر امریکا اور طالبان کے مابین پائے جانے اختلافات ختم ہو گئے ہیں۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق یہ پیش رفت طالبان اور امریکا کے مابین امن مذاکرات کے آٹھویں دور میں دیکھی گئی۔

طالبان کے ایک ترجمان نے میڈیا سے بات چیت میں کہا کہ طالبان اور انتہا پسند گروہوں کے مابین روابط کے خاتمے کے یقین دہانیوں کے بارے میں بھی بات چیت مثبت رہی ہے۔

امریکا نے مذاکرات میں ہونے والی پیش رفت کے حوالے سے تفصیلات نہیں بتائیں تاہم خصوصی مندوب زلمے خلیل زاد نے اپنے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ مذاکرات میں اہم پیش رفت ہوئی ہے۔

خیال رہے کہ امریکا اور طالبان دونوں کی جانب سے مثبت تاثر سامنے آرہا ہے، ماہرین کا کہنا ہے کہ مذاکرات اب حتمی مراحل میں داخل ہوچکے ہیں۔

طالبان افغانستان سے مکمل طور پر امریکی فوج سمیت غیرملکی افواج کے انخلا پر بھی زور دیتا آیا ہے۔ افغان امن عمل میں سب سے بڑی رکاوٹ غیر ملکی فوجیوں کا افغانستان میں موجود ہونا ہے۔

امریکی حکام اور طالبان رہنماؤں نے حال ہی میں کہا تھا کہ فریقین کے درمیان مذاکرات میں حتمی معاہدہ طے پاجائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں