پشاور ہائیکورٹ نے پشتون تحفّظ تحریک کے اراکین قومی اسمبلی علی وزیر اور محسن داوڑ کی ضمانت منظور کرلی، رہائی کا حکم

بنوں (ڈیلی اردو) پشاور ہائیکورٹ کے بنوں بنچ نے اراکین قومی اسمبلی اور پشتون تحفظ موومنٹ کے رہنماؤں علی وزیر اور محسن داوڑ کی درخواست منظور کرتے ہوئے ان کی رہائی کا حکم جاری کردیا۔

دونوں اراکین کی جانب سے سینئر وکیل لطیف آفریدی، سنگین خان ایڈووکیٹ اور طارق افغان نے نمائندگی کرتے ہوئے عدالت میں دلائل دیے۔

وکلاء پینل کے رکن طارق افغان نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ پشاور ہائیکورٹ بنوں بنچ نے دونوں رہنماؤں کی ضمانت منظور کرلی ہے۔

آج بنوں ہائی کورٹ میں محسن داوڑ اور علی وزیر صمانت کیس کی سماعت ہوئی جس میں بنوں ہائی کورٹ نے ضمانت منظور کردیا اور دنوں کی رہائی کی حکم جاری کردیا۔

پشتون تحفظ موومنٹ کے رکن اور سوشل میڈیا پر متحرک احتشام افغان نے وکلاء پینل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ لطیف آفریدی، سنگین خان اور طارق افغان کی کوششوں کی وجہ سے آج محسن داوڑ اور علی وزیر کو ضمانت مل گئی۔

واضح رہے کہ ضلع شمالی وزیرستان سے منتخب دونوں اراکین اسمبلی 26 مئی 2019ء کو پیش آنیوالے خڑ کمر واقعے کے الزام میں قید تھے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں