64

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مذہبی مقامات کے تحفظ سے متعلق قرارداد منظور

نیویارک (ڈیلی اردو) اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مذہبی مقامات کے تحفظ سےمتعلق قرارداد منظور کرلی گئی، قراردادمیں مذہبی مقامات کو ختم یا زبردستی تبدیل کرنے کی حرکت کی مذمت کی گئی۔

تفصیلات کے مطابق اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مذہبی مقامات کے تحفظ سےمتعلق قرارداد منظور کرلی گئی، قراردادکی سرپرستی پاکستان، سعودی عرب اور دیگر او آئی سی ممالک نے کی۔

قرارداد میں مذہبی مقامات کو ختم یا زبردستی تبدیل کرنے کی حرکت کی مذمت کی گئی، اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے کہا کہ قرارداد وزیراعظم پاکستان کی اسلاموفوبیا کیخلاف کوشش کاحصہ ہے، قرارداد بھارت میں ہندوتوا انتہا پسندوں کے لئے سرزنش ہے، بھارت میں مذہبی مقامات کو نقصان پہنچائےجانے کی مذمت کی گئی۔

دوسری جانب اقوام متحدہ میں پاکستان کے مستقل مندوب منیر اکرم نے پیغام میں کہا تھا کہ گوکدال کے قتل عام کی31ویں برسی ہے، 21 جنوری 1990 میں بھارتی قابض فوج نے بزدلانہ، وحشیانہ حملہ کیا۔

منیر اکرم نے بھارتی حملے میں ہلاک ہونیوالے بہادر کشمیریوں کو خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا تھا کہ ہمارے دل شہدا گوکدال کے خاندانوں کے اہلخانہ کے ساتھ ہیں، ایک لاکھ سے زائد کشمیریوں نے جدوجہد آزادی کی قیمت ادا کی ہے، حکومت پاکستان کشمیری بھائیوں، بہنوں کے غم میں شریک ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں