امریکا کا روس کے 27 سفارت کاروں کو ملک چھوڑنے کا حکم

واشنگٹن (ڈیلی اردو) امریکا نے ایک بار پھر 2 درجن سے زائد روسی سفارت کاروں کو ملک چھوڑنے کا حکم دیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق امریکا نے روس کے 27 سفارت کاروں کے ویزوں میں توسیع سے انکار کرتے ہوئے 30 جنوری تک ملک چھوڑنے کی ہدایت کی ہے۔

اطلاعات کے مطابق روس کے امریکہ میں سفیر اناتولی انتونیوف نے کہا ہے کہ 27 روسی سفارت کاروں اور ان کے اہل خانہ کو امریکہ سے نکال دیا گیا ہے اور وہ 30 جنوری کو وہاں سے چلے جائیں گے۔

روس اور امریکا کے درمیان سفارتی جنگ تیز ہونے کے نتیجے میں امریکا نے روس کے 27 سفارت کاروں کو ملک بدر کیا ہے۔

روسی سفیر اناتولی انتونوف نے سنیچر کو سولوویف کے لیے ایک کو لائیو ویڈیو انٹرویو میں کہا کہ ہمارے سفارت کاروں کو نکالا جا رہا ہے۔ میرے ساتھیوں کا ایک بڑا گروپ (27 افراد) اپنے اہل خانہ کے ساتھ 30 جنوری کو ہمیں چھوڑ دے گا، ہمیں عملے کی شدید کمی کا سامنا ہے۔

روس کی وزارت خارجہ کی ترجمان ماریا زاخارووا کے مطابق 29 اکتوبر تک تقریباً 200 روسی سفارت کار امریکہ میں اپنی ملازمتوں پر تھے جن میں اقوام متحدہ میں روسی مشن کا عملہ بھی شامل تھا۔

امریکی حکومت نے گزشتہ ماہ کہا تھا کہ روس میں امریکی مشن کا عملہ 2017 کے اوائل میں 1200 تھا جو یکے بعد دیگرے بے دخلیوں اور پابندیوں کی وجہ سے کم ہو کر 120 رہ گیا اور سفارت خانے میں نگراں کی موجودگی کے علاوہ کسی بھی چیز کو جاری رکھنا مشکل تھا۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں