صوبے میں سرمایہ کاری کے بے شمار مواقع ہیں: وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال

کوئٹہ (نیوز ڈیسک) وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ بلوچستان کا طویل ساحل سرمایہ کاری کے بے پناہ مواقعوں کا حامل ہے، ساحلی پٹی ماہی پر گیری اور سیاحت سمیت مختلف شعبوں میں بہترین سرمایہ کاری کی جاسکتی ہے، صوبائی حکومت سرمایہ کاروں کو سازگار ماحول اور تمام ضروری سہولیات فراہم کرے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہوں نے حب پاک سالٹ ریفائنری کے چیف ایگزیکٹیو اسماعیل ستار سے بات چیت کرتے ہوئے کیا جنہوں نے منگل کے روز یہاں ان سے ملاقات کی، سیکریٹری معدنیات، سیکریٹری توانائی اور سیکریٹری صنعت بھی اس موقع پر موجود تھے۔

کمپنی کے چیف ایگزیکٹیو نے بلوچستان کے ساحلی علاقے کلمت میں نمک کی تیاری کے شعبہ میں سرمایہ کاری میں دلچسپی کا اظہارکرتے ہوئے وزیراعلیٰ کو مجوزہ منصوبے کی تفصیلات سے آگاہ کیا، انہوں نے بتایا کہ دنیا کے دیگر ممالک میں ساحلی علاقوں میں نمک تیار کرنے کے منصوبوں میں سمندری حیات کا تحفظ اور سیاحت کا فروغ بھی منسلک ہے جبکہ مقامی سطح پر روزگار کے مواقع بھی پیدا ہوتے ہیں اور مقامی معیشت کو استحکام ملتا ہے۔

ابتدائی تخمینہ کے مطابق منصوبے سے سالانہ 24میٹرک ٹن نمک حاصل ہوگا جو کھانے کے علاوہ مختلف صنعتوں میں استعمال ہوسکے گا، انہوں نے حکومت بلوچستان کو منصوبے میں شراکت داری کی پیشکش بھی کی، وزیراعلیٰ نے منصوبے میں دلچسپی کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ محکموں کو منصوبے کے تمام پہلوؤں بالخصوص پرائیویٹ پبلک پارٹنر شپ کے تحت کمپنی کے ساتھ شراکت داری کا جائزہ لینے کی ہدایت کی۔

دریں اثناء وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان نے کہا ہے کہ حکومت بلوچستان معدنی ترقی کے لئے نئی پالیسی متعارف کرانے جارہی ہے جس کا مقصد صوبے کے مفادات کے مطابق معدنی وسائل کے شعبہ میں زیادہ سے زیادہ سرمایہ کاری کا حصول ہے ، حکومت بلوچستان معدنی شعبہ میں بنیادی ڈھانچہ کی بہتری اور سرمایہ کاروں کو ضروری سہولیات کی فراہمی کے ذریعہ سرمایہ کاری کے لئے سازگار ماحول کو یقینی بنائے گی۔

ان خیالات کا اظہار انہو ں نے چینی کمپنی ایم سی سی کے صدر مسٹر ہی ژو پنگ He Xuping) (Mr. سے بات چیت کرتے ہوئے کیا، ایم سی سی گروپ کے وائس پریذیڈنٹ مسٹر ماوائی کنگ (Mr. Ma Weiqing) اور کمپنی کے دیگر عہدیداروں کے علاوہ متعلقہ محکموں کے سیکریٹری بھی اس موقع پر موجود تھے۔

سیندک اور دودھر منصوبوں پر کام کرنے والی چینی کمپنی ایم سی سی کے حکام نے وزیراعلیٰ کو ان منصوبوں کی پیشرفت سمیت بعض مسائل سے متعلق بریفنگ دیتے ہوئے آگاہ کیا کہ سیندک منصوبے کو مزید وسعت دینے کے علاوہ دودھر منصوبے کی پیشرفت کو تیز کرنے کے لئے اقدامات کئے جارہے ہیں جبکہ کمپنی سی ایس آر کے تحت مقامی معیشت کی بہتری اور سماجی شعبہ کی ترقی کے لئے اپنی ذمہ داریاں ادا کررہی ہے اور مقامی افراد کو روزگار بھی فراہم کیا جارہا ہے۔

چینی حکام نے معدنی شعبہ کی ترقی کے لئے وزیراعلیٰ بلوچستان کے وژن اور صوبائی حکومت کی جانب سے سنجیدہ بنیادوں پر اٹھائے گئے اقدامات کو خوش آئند اور منرل کانفرنس کے انعقاد کو اہم پیشرفت قراردیا، وزیراعلیٰ نے کہا کہ وفاقی اور صوبائی حکومت سیندک اور دودھر منصوبوں کے لئے چینی کمپنی کے ساتھ بھرپور تعاون کررہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ گذشتہ سالوں میں حکومت بلوچستان اور ایم سی سی کو مزید معدنی منصوبوں میں کام کرنا چاہئے تھا جس کا فائدہ بلوچستان کے عوام کو پہنچتا تاہم اب صوبائی حکومت ایم سی سی سمیت دیگر سرمایہ کار کمپنیوں کے ساتھ معدنی شعبہ میں سرمایہ کاری اور شراکت داری کے منصوبے شروع کرے گی۔

Facebook Notice for EU! You need to login to view and post FB Comments!

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں